جامع مسجد امیر حمزہ رضی اللہ تعا لی عنہ

جامع مسجد امیر حمزہ رضی اللہ تعا لی عنہ
شہر کے مرکز میں قدیمی جامع مسجد ہے۔ اس کی توسیع کا کام شروع ہے۔ اللہ تعالیٰ کے فضل وکرم اور آپ لوگوں کے تعاون سے دو منزلہ ڈبل ہال، اس کا پلستر اور ایک منزل کا فرض چپس مکمل ہوچکا ہے۔ اس کے علاوہ محراب کا کام بھی تقریباًدو لاکھ روپے کی لاگت سے مکمل ہو کر قابل دید منظر پیش کررہا ہے جو پورے علاقے میں منفرد اور دیکھنے کے قابل ہے۔ اس کام میں مسجد تعمیر کمیٹی کے اراکین حاجی محمد اقبال چوہان، ملک فیروز خان بلوچ سابق چیئرمین بلدیہ اور حاجی عبدالحمید چوہان سابق صدر انجمن تاجران، حاجی محمد اقبال الحمراء سویٹ، چودھری محمد عمر سابق کونسلر، چودھری محمد زمان کی انتھک کوششیں شامل ہیں۔
آپ سے خصوصی گزارش ہے کہ اپنے آبائی شہر کے ان دو اہم منصوبوں دارالعلوم محمدیہ رضویہ اور جامع مسجد امیر حمزہ کی تکمیل کے لیے خود مالی تعاون فرمائیں اور دوسروں کو بھی ترغیب دیں۔ (واللہ خیر الرازقین)

( مرکزی جامع مسجد امیر حمزہ رضی اللہ عنہ کی اہم ضرورت )
*مرکزی جامع مسجد امیرِ حمزہ پنڈدادنخان کی سب سے بڑی اور تاریخی جامع مسجد ہے جس کی تعمیر نو اور توسیع کا منصوبہ اپنی تکمیل کی طرف تیزی سے گامزن ہے اب مسجد کی بیرونی اطراف کی فنشنگ، اندرونی اور بیرونی اطراف کی گرلیں وغیرہ کا کام ابھی باقی ہے جس پر اخراجات کا تخمینہ 20لاکھ روپے ہے علاوہ ازیں ایک سو بیس فٹ بلند وبالا ”مینار اصحاب بدر” کی تعمیر ہنوز تشنۂ تکمیل ہے جس پر اخراجات کا تخمینہ 20لاکھ روپے لگایا گیا ہے